سماج وادی پارٹی میں جاری داخلی بحران کے درمیان ملائم سنگھ یادو کے بااعتماد رفیق شیوپال یادو نے آج وزیراعلی اکھیلیش سنگھ یادو سے ملاقات کی ہے تاہم اس ملاقات کے بعد شیوپال یادو نے میڈیا سے بات نہیں کی ۔ پارٹی کے دو گروپوں کے درمیان مصالحت کیلئے مسلسل کوششیں کی جارہی ہیں ۔
سماج وادی پارٹی اکھیلیش گروپ کے لیڈر رام گوپال یادو نے کہا ہے کہ اکھیلیش کی قیادت والی ہی حقیقی سماج وادی پارٹی ہے ۔ میڈیا سے بات کرتے ہوئے رام گوپال یادو نے بتایا کہ پارٹی کے دو سو انتیس ارکان اسمبلی کے منجملہ دو سو بارہ ارکان کی اکھیلیش سنگھ یادو کو حمایت حاصل ہے۔ انہوں نے یہ بھی بتایا کہ دو سو بارہ ارکان اسمبلی نے اس سلسلہ میں حلفنامہ پر دستخط بھی کئے ہیں ۔ انہوں نے بتایا کہ اڑسٹھ ارکان کونسل کے منجملہ چھپن اکھیلیش کی حمایت میں حلفنامہ پر دستخط کرچکے ہیں اور ان حلفناموں کو الیکشن کمیشن کو پیش کیا جائیگا۔

اکھیلیش سنگھ یادو کے حامی رکن پارلیمنٹ نریش اگروال نے کہا ہے کہ پارٹی کے بعض لوگ ملائم سنگھ یادو کو سوچنے سے روک رہے ہیں ۔ میڈیا سے بات کرتے ہوئے نریش اگروال نے پارٹی میں اختلافات کو مستردکردیا ۔ان کا کہنا تھا کہ صلح کا سوال اس وقت اٹھتا ہے جب پارٹی میں لڑائی ہو ۔ ہم ملائم سنگھ یادو کے بیانر اور ان کے نعرے کے تحت ہی انتخاب لڑیں گے

Post a Comment

 
UA-24837031-1