اترپردیش کی سماج وادی پارٹی دو تکڑوں میں بٹ گئی ہے ۔ اور دونوں گرہوں نے پارٹی کے انتخابی نشان پر 'قبضہ'جمانے کیلئے جنگ شروع کردی ہے ۔ اب دیکھنا یہ ہے کہ آخر سائیکل پر سواری کون کرے گا۔ باپ اور بیٹے کے دوگرہو سائیکل کے انتخابی نشان پر دعوی جتا رہے ہیں. دونوں ہی گروہ سائیکل پر اپنی دعویداری کو لے کر پیر کو الیکشن کمیشن پہنچیں گے. ملائم سنگھ یادو دہلی میں ہی امر سنگھ سے ملاقات کریں گے اور ان کے ساتھ شیو پال یادو بھی ہوں گے. اس درمیان، ملائم سنگھ یادو نے 5 جنوری کو منعقد ہونے والے اجلاس کوملتوی کر دیا ہے. شیو پال یادو نے ٹویٹ کر اس کی اطلاع دی ہے.پارٹی کے نشان کولیکر اکھلیش کے خیمہ کے قائدین بھی سائیکل پر دعویداری کے لئے الیکشن کمیشن پہنچے گے . ایسا لگ رہا ہے کہ پارٹی کے درمیا ن شروع ہوا جھگڑا اس قدر بڑ ھ چکا ہے کہ مفاہمت کے راستے پوری طرح سے بند نظر آ رہے ہیں. اب سوال یہ ہے کہ سماج وادی پارٹی کس کی ہو گی؟ ملائم کی یا اکھلیش کی؟

Post a Comment

 
UA-24837031-1