ریاستی وزیر تعلیم کے سری ہری نے کہا ہے کہ ریاست میں پہلی بار انٹرمیڈیٹ میں مفت تعلیم فراہم کی جائے گی۔ میڈیا سے بات کرتے ہوئے وزیر تعلیم نے کہا کہ ریاست میں انٹرشعبہ تعلیم کو ماڈل تعلیم میں تبدیل کیاجائے گا۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ غریب اور پچھڑے طبقات سے تعلق رکھنے والے طلباء کے لئے مفت کتابیں بھی تقسیم کی گئی ہیں۔ وزیرتعلیم کا کہناہے کہ ریاست میں سال دوہزار چار سے دوہزار چودہ تک انیاسی جونئرکالجس کو منظوری دی گئی تھی۔ انہوں نے بتایاکہ اڑسٹھ جونیئر کالجس کے لئے کوئی عمار ت نہیں تھی۔ ٹی آرایس حکومت کے اقتدار میں آنے کے بعد چھپن کالجس کے لئے ذاتی عمارت کے لئے اراضی منظور کی گئی۔ انہوں نے کہا کہ کالجس میں بنیاد سہولتوں کی فراہمی کے لئے فنڈس منظورکئے جائیں گے۔ جونئر لکچرارس کے مسائل سے متعلق وزیر تعلیم نے بتایاکہ حکومت اس سلسلے میں سنجیدہ ہے۔ انہوں نے تمام عارضی لکچرارس کو مشورہ دیا کہ بارہ جنوری سے قبل خدمات پر رجوع ہوجائیں ورنہ جی او نمبر سولہ کے تحت باقاعدہ بنانے کے عمل میں انہیں نااہل قرار دیاجائے گا۔ وزیر تعلیم کا کہناہے کہ ہائی کورٹ میں مقدمہ زیر دوراں ہونے کی وجہ سے باقاعدہ بنانے کے عمل میں تاخیر ہورہی ہے۔

Post a Comment

 
UA-24837031-1