مجلس نے زبردست جلسہ عام سے ممبئی کے بلدی انتخابات کی مہم کا آغاز کردیا ہے ۔ اتوار کی رات ناگپاڑہ میں ہزاروں افراد کے مجمع سے خطاب کرتے ہوئے مجلس کے صدر بیرسٹر اسدالدین اویسی نے کہا کہ مجلس اتحادالمسلمین بی ایم سی کے چھتیس ہزار کروڑ روپیے کے بجٹ کی منجملہ اقلیتوں کے اکثریتی آبادی والے علاقوں کیلئے مختص کئے گئے سات ہزار سات سو کروڑ روپیے کا صحیح استعمال کرتے ہوئے مسائل کو حل کرے گی ۔ ممبئی میں شیواجی کے مجسمہ کی افتتاحی تقریب میں وزیراعظم کی طرف سے شیواجی کے مسلم ساتھیوں کو نظرانداز کئے جانے پر بھی بیرسٹر اویسی نے برہمی کا اظہار کیا ۔ انہوں نے کہا کہ شیواجی کیلئے مسلم فوجیوں نے جان کی بازی لگادی تھی ۔ بیرسٹر اویسی نے کہا کہ ہفتہ کو وزیراعظم مودی نے قوم سے جو خطاب کیا وہ صرف سستی شہرت کا حربہ تھا ۔ پرانی اسکیموں کو ہی الٹ پھیرکرتے ہوئے اعلانات کئے گئے ۔ بیرسٹر اویسی نے کہا کہ اگر مجلس اتحادالمسلمین کے تیس یا چالیس کارپوریٹر منتخب ہوتے ہیں تو عوام کے مسائل کی یکسوئی کو یقینی بنایا جائے گا ۔ بیرسٹر اویسی نے ریاست میں برسراقتدار بی جے پی شیوسینا اتحادی حکومت پر مسلمانوں کے مسائل کو نظرانداز کرنے کا بھی الزام عائد کیا ۔

Post a Comment

 
UA-24837031-1