Saturday, 31 December 2016

سال دوہزارسولہ میں تقریباً پندرہ ہزاراسرائیلیوں نے مسجد اقصیٰ کی بے حرمتی کی

سال دوہزارسولہ میں تقریباً پندرہ ہزاراسرائیلیوں نے مسجد اقصیٰ کی بے حرمتی کی



ایک رپورٹ میں کہا گیاہے کہ سال دوہزارسولہ میں تقریباً پندرہ ہزاراسرائیلیوں نے مسجد اقصیٰ کی بے حرمتی کی ہے۔ فلسطینی وقف بورڈ نے اپنی ایک رپورٹ میں یہ بات کہی۔ متعلقہ وقف بورڈ نے ایک بیان میں یہ بات کہی۔ جارڈن کے وزیر اطلاعات محمد العمومانی نے بتایاکہ اسرائیل کے لوگوں کی طرف سے مسجداقصی میں داخل ہونے یا ہلا بولنے کی تمام کوششیں غیر قانونی ہے۔ انہوں نے کہاکہ جارڈن نے مسجد اقصیٰ میں موجود حالت کو برقرار رکھنے کا تہہ کرلیاہے۔ انہوں نے یہ بات ایک ایسے وقت کہی جب جمعرات کو ایک سو انچاس اسرائیلی آباد کاروں نے مسجد اقصیٰ کی بے حرمتی کی تھی ۔ امریکی کانگریس میں بعض ری پبلکین ارکان یواین سکیوریٹی کونسل میں اسرائیل کے خلاف منظورکی گئی قرارداد کے خلاف ایک مہم شروع کی ہے۔ اس قرارداد میں اسرائیل کی یہیودی بستوں کو غیرقانونی قراردیاگیاتھا۔ کنساس کے ری پبلکن سینٹر جیلی موران نے کہا کہ وہ منگل کو سینٹ میں ایک قرار داد پیش کریں گے اور اسرائیل سے یکجہتی کا اظہارکرتے ہوئے یوناٹیڈنشین کی قرارداد کی مخالفت کریں گے۔ انہوں نے ایک بیان میں کہا کہ پچھلے آٹھ سال میں اوباما حکومت نے کئی غلطیاں کی ہیں۔ جس سے میڈل ایسٹ میں ہمارے سب سے مضبوط اتحادی کونقصان پہنچا ہے۔ اس دوران فلوریڈا کے ری پبلکن سنٹر ڈینس راوس نے کہا کہ وہ اوباما میں کی مذمت کرتے ہوئے ایک قرارداد پیش کریں گے۔ جس میں اسرائیل کے خلاف خطرناک کاروائیوں کے لئے یوناٹیڈ نیشن پر تنقیدیں کی جائیں گی۔
نیلور : آتشزدگی کے واقعہ میں دس افراد کے مارے جانے کی اطلاع

نیلور : آتشزدگی کے واقعہ میں دس افراد کے مارے جانے کی اطلاع



نیلورمیں پٹاحوں کی تیاری کے فیاکٹری میں ہوئے آتشزدگی کے واقعہ میں دس افراد کے مارے جانے کی اطلاع ملی ہے۔ بتایاگیاہے کہ نیلور کے پورلا کاٹا میں دھماکوں کے ساتھ آگ لگ گئی۔ اس واقعہ میں فیاکٹری میں کام کرنے والے مزدور زندہ جل کر فوت ہوگئے۔ بتایاگیاہے نئے سال کی آمد کے پیش نظر پٹاخے تیارکئے جارہے تھے۔ اس واقعہ کے وقت بیس مزدور فیاکٹری میں کام کررہے تھے بعض مزدور شدید طورپر جھلس گئے ہیں جنہیں دواخانہ منتقل کردیاگیاہے۔ حکام نے ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ ظاہرکیاہے۔
ریاست تلنگانہ میں سردی کی شدت میں غیر معمولی اضافہ

ریاست تلنگانہ میں سردی کی شدت میں غیر معمولی اضافہ



ریاست تلنگانہ میں سردی کی شدت میں غیر معمولی اضافہ ہوگیاہے۔ رات اور صبح کے اوقات میں درجہ حررات میں غیر معمولی کمی واقع ہوئی ہے۔ اضلاع میں درجہ حرارت آٹھ تا دس ڈگری کے درمیان بتایاگیاہے۔ محکمہ موسمیات کے مطابق آنے والے چند دنوں تک سردی کی شدت اسی طرح برقرار رہ سکتی ہے۔
پرنب مکرجی کا جنوبی ہند کا دورہ آج اختتام کو پہونچا

پرنب مکرجی کا جنوبی ہند کا دورہ آج اختتام کو پہونچا



صدر جمہوریہ پرنب مکرجی کا جنوبی ہند کا دورہ آج اختتام کو پہونچا۔ وہ بائیس دسمبر کو حیدرآباد آئے تھے جہاں روایتی طور پر انہوں نے بولارم میں واقع راشٹراپتی نیلائم میں سرمائی چھٹیاں گزاریں۔ اس موقع پر حیدرآباد سمیت تروپتی اور بنگلورو میں مختلف پروگراموں میں شرکت کی تھی اور کئی اہم شخصیتوں سے ملاقات بھی کی۔ صدر جمہوریہ ہر سال سرمائی تعطیلات گزارنے کیلئے روایتی طور پر حیدرآباد کا دورہ کرتے ہیں۔ آج گیارہ بجے دن حیدرآباد کے حکیم پیٹ ایرپورٹ سے فضائیہ کے خصوصی طیارہ کے ذریعہ وہ دہلی روانہ ہوگئے۔ ایرپورٹ پر گورنر ای ایس ایل نرسمہن ‘ وزیر اعلی چندر شیکھر راؤ ‘ عوامی نمائندوں نے انہیں وداع کیا۔
عوامی مقامات میں جانے سے گریز کی ہدایت:حکومت اسرائیل

عوامی مقامات میں جانے سے گریز کی ہدایت:حکومت اسرائیل



اسرائیلی حکومت نے سیاحت سمیت دیگر مقاصد کے تحت ہندوستان کا دورہ کرنے والے اسرائیلی شہریوں کو نئے سال کے موقع پر عوامی مقامات میں جانے سے گریز کی ہدایت کی ہے۔حکومت اسرائیل نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ نئے سال کے جشن کے دوران جنوب مغربی ہندوستان میں اسرائیلی سیاحوں پر حملے کیے جاسکتے ہیں۔اسرائیل کے انسداد دہشت گردی محکمہ کی جانب سے یہ بیان جاری کیاگیاہے۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ وزیراعظم بنجمن نیتن یاھو نے جنوب مغربی ہندوستان میں اسرائیلی سیاحوں پرحملوں کا خطرہ موجود ہے۔ اس لیے ہندوستان میں موجود تمام شہریوں کو تاکید کی جاتی ہے کہ وہ ساحلی کلبوں میں جمع ہونے اور پبلک مقامات میں جانے سے گریز کریں۔اسرائیلی شہریوں کو کہا گیا ہے کہ وہ بازاروں اور میلوں ٹھیلوں میں شرکت سے گریز کریں۔ اسرائیل نے ہندوستان میں اپنے شہریوں پر خطرے کا تناسب تین درجے بتایا ہے تاہم اس کی مزید تفصیلات سامنے نہیں آئیں۔واضح رہیکہ اسرائیل میں فوجی سروسز ختم کرنے کے بعد نوجوان بڑی تعداد میں ہندوستان کا رخ کرتے ہیں۔
جنرل ویپن راوت نے اپنے عہدہ کا جائزہ حاصل کرلیا

جنرل ویپن راوت نے اپنے عہدہ کا جائزہ حاصل کرلیا



دلبیر سنگھ سہاگ کے فوجی سربراہ کے عہدہ سے سبکدوشی کے بعد جنرل ویپن راوت نے اپنے عہدہ کا جائزہ حاصل کرلیا۔ سبکدوش ہونے والے آرمی چیف دلبیر سنگھ سہاگ نے انہیں ہندوستانی فوج کی کمان سونپ دی۔ اس موقع پر فوج کے اعلی عہدیدار بھی موجود تھے۔
اروناچل پردیش میں بی جے پی نے حکومت کی تشکیل کا دعویٰ کردیا

اروناچل پردیش میں بی جے پی نے حکومت کی تشکیل کا دعویٰ کردیا



بی جے پی نے آج ارونا چل پردیش میں اپنی حکومت بنالی ہے۔ پیوپلز پارٹی آف ارونا چل پردیش کے تنئتیس ارکان اسمبلی نے آج بی جے پی میں شمولیت اختیار کرلی۔وزیراعلٰی پیما کھانڈو نے، میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ دوتہائی سے زائد ارکان اسمبلی نے بی جے پی میں شامل ہونے کا فیصلہ کیا۔ کھنڈو نے تمام ارکان اسمبلی کو اسمبلی اسپیکر ٹین زینگ کے سامنے پیش کیا جس کے بعد اسپیکر نے انکی ارکان اسمبلی کی بی جے پی میں شمولیت کو قبول کرلیا۔ ۔ ان کا کہناتھا کہ یہ فیصلہ ریاست میں سیاسی بحران کے خاتمے اور ریاست کی ترقی کے پیش نظرکیاگیاہے۔
نوٹ بندی کو ملک پر مودی حکومت کا شراپ : کانگریس

نوٹ بندی کو ملک پر مودی حکومت کا شراپ : کانگریس



کانگریس نے نوٹ بندی کو ملک پر مودی حکومت کا شاپ قراردیاہے۔ میڈیا سے بات کرتے ہوئے پارٹی کے سینئرلیڈر رندیپ سرجے والا نے کہا کہ کالے دھن کے نام پر نوٹ بندی کافیصلہ تھوپتے ہوئے ملک کے غریب عوام کو مشکلات سے دوچار کیاگیا اورکسانوں سے ان کی فصل کی قیمت بھی چھین لی گئی۔ کئی افراد بینک کی قطاروں میں کھڑے ہوکر فوت ہوچکے ہیں۔ سرجے والا نے کہا کہ عوام کا پیسہ بینکوں میں واپس لے کر وزیراعظم مودی خود کی واہ واہی لوٹنے کی کوشش کررہے ہیں۔
پارٹی میں حالات اچھے نہیں

پارٹی میں حالات اچھے نہیں



یادو خاندان میں جھگڑے کی ایک وجہ سمجھے جانے والے عتیق احمد نے کہا ہے کہ پارٹی میں حالات اچھے نہیں ہے ۔ سماج وادی پارٹی دفتر کے پاس میڈیا سے بات کرتے ہوئے عتیق احمد نے کہا کہ ان کے لیڈر ملائم سنگھ یادو ہیں لیکن وزیر اعلی کیلئے پہلی پسند اکھلیش سنگھ یادو ہیں۔
اترپردیش سماج وادی پارٹی کا بحران فی الحا ل تھما۔

اترپردیش سماج وادی پارٹی کا بحران فی الحا ل تھما۔



چوبیس گھنٹوں کے اندر ہی ملائم سنگھ یادو نے گزشتہ روز اپنے بیٹے اور وزیر اعلی اکھلیش سنگھ یادو کے ساتھ پروفیسر رام گوپال یادو کی چھ سال کی پارٹی سے معطلی کے فیصلہ کو واپس لے لیا ہے ۔ لکھنو میں گزشتہ رات سے ہی ڈرامائی واقعات دیکھے گئے ۔ وزیر اعلی اکھلیش سنگھ یادو نے اپنے والد اور پارٹی کے قومی صدر ملائم سنگھ یادو سے ملاقات کی تھی ۔ بتایا جارہا ہے کہ یکم جنوری کو پارٹی کا قومی کنونشن منعقد ہونے والا ہے اور اس کنونشن میں بھی وہ بعض مسائل کو اٹھائیں گے ۔ اس سلسلہ میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے اترپردیش ایس پی کے صدر شیو پال سنگھ یادو نے بتایا کہ پارٹی سربراہ ملائم سنگھ یادو کا انہیں پیام ملا ہے کہ فوری اکھلیش سنگھ یادو اور رام گوپال یادو کی چھ سال کی معطلی کو برخاست کرتے ہوئے انہیں دوبارہ پارٹی میں بحال کیا جائے ۔ شیوپال یادو نے بتایا کہ ٹکٹوں کی تقسیم کے تنازعہ پر بھی مل کر بات چیت ہوگی اور فرقہ وارانہ طاقتوں کو اقتدار میں آنے سے روکنے کیلئے مل کر مہم چلائی جائے گی اور آئندہ بھی ان کی پارٹی کامیابی حاصل کرے گی ۔ شیوپال یادو نے کہا کہ ملائم سنگھ یادو جسے بھی امیدوار بنائیں گے اسے قبول کرتے ہوئے عوام کے بیچ جاناہوگا۔
پارٹی سے معطلی کوواپس لئے جانے کے اعلان پر تبصرہ کرتے ہوئے پروفیسر رام گوپال یادونے کوئی خاص ردعمل ظاہرنہیں کیا۔ میڈیا سے بات کرتے ہوئے معطلی گذشتہ رات ہوئی تھی لیکن ہمارے فیصلے اس سے پہلے لے لئے گئے تھے کل پارٹی کا اجلاس ہوگا اس میں اہم فیصلے ہوں گے۔ اس سے ہٹ کر رام گوپال یادونے کسی بھی سوال کا جواب نہیں دیا۔
اکھلیش سنگھ یادو اور رام گوپال یادو کی معطلی ہٹائے جانے پر وزیراعلی کے حامیوں کی طرف سے مسرت کا اظہارکیاگیا۔ میڈیا سے بات کرتے ہوئے اکھلیش سنگھ یادوکے حامیوں نے کہا کہ جس کسی نے سازش کی تھی ان کے چہرے لٹک گئے ہیں۔
اس دوران سماج وادی پارٹی کے رکن راجیہ امر سنگھ نے لندن سے ایک پیام روانہ کیاہے جس میں انہوں نے کہا کہ ملائم سنگھ یادو سماج وادی پارٹی کے ساتھ ساتھ اکھلیش سنگھ یادوکے بھی والدہ ہیں انہوں نے پارٹی میں جاری بحران کو غلط قراردیا۔ انہوں نے کہا کہ وہ ان حالات میں پوری طرح سے ملائم سنگھ یادوکے ساتھ ہیں۔
پارٹی سے نکالے جانے کے بعد اترپردیش کے وزیر اعلی اکھلیش سنگھ یادو نے آج اپنی قیامگاہ پر پارٹی ارکان اسمبلی کا اجلاس طلب کیا ۔ اس اجلاس میں تقریباً ایک سو اسی کے قریب ارکان اسمبلی نے شرکت کی ۔ بیشتر ارکان اسمبلی نے اکھلیش سنگھ یادو سے وفاداری کا اعلان کیا اور کہا کہ وہ اکھلیش سنگھ یادو کے ساتھ ہی رہیں گے۔ بعض ارکان اسمبلی نے اکھلیش سنگھ کو چھ سال کیلئے پارٹی سے نکالے جانے پر بھی افسوس کا اظہار کیا ۔

دوسری طرف ملائم سنگھ یادو کی قیامگاہ پر بھی پارٹی قائدین کا تانتا دیکھا گیا ۔ زیادہ تر سینئر قائدین ہی ملائم سنگھ یادو کی قیامگاہ پر نظر آئے ۔ اس موقع پر میڈیا سے بات کرتے ہوئے پارٹی لیڈر مدھوکر جیٹلی نے کہا کہ سماج وادی پارٹی کے صدر ملائم سنگھ یادو ہیں اب تک سماج وادی پارٹی کے امیدواروں کا انتخاب ملائم سنگھ یادو کرتے آئے ہیں۔ اس سے پہلے پارٹی عاملہ کے اجلاس میں ایک فیصلہ ہوا تھا کہ ٹکٹ کا فیصلہ ملائم سنگھ یادو ہی کریں گے ۔ اور وزیر اعلی اکھلیش سنگھ یادو نے بھی اس فیصلہ سے اتفاق کیا تھا ۔ انہو ں نے کہا کہ پارٹی میں جو بھی بحران ہے اسے جلد حل کرلیا جائے گا۔

Friday, 30 December 2016

کشمیر وادی میں علحدگی پسندوں کی اپیل پر آج ہڑتال

کشمیر وادی میں علحدگی پسندوں کی اپیل پر آج ہڑتال



کشمیر وادی میں علحدگی پسندوں کی اپیل پر آج ہڑتال ہے۔ علحدگی پسند تنظیموں نے جمعہ اور ہفتہ کو ہڑتال کا اعلان کیا ہے ۔ ہڑتال کی وجہ سے وادی کے کئی علاقوں میں بازار بند رہے ۔ سڑکیں بھی سنسان دکھائی دیں۔ جمعہ کے پیش نظر چوکسی اختیار کی گئی تھی ۔ واضح رہے کہ آٹھ جولائی کو برہان وانی کی سیکیورٹی فورسس کے ساتھ جھڑپ میں ہلاکت کے بعد وادی میں احتجاج پھوٹ پڑا تھا اور تقریباً سو افراد جاں بحق ہوئے تھے ۔ ہڑتال کی وجہ سے سیکیورٹی فورسس کو چوکس دیکھا گیا ۔
مالیگاؤں بم دھماکے کے کیس کا ایک نیا موڑ

مالیگاؤں بم دھماکے کے کیس کا ایک نیا موڑ



مالیگاؤں بم دھماکے کے کیس کا ایک نیا موڑ سامنے آیاہے۔ مہاراشٹرا اے ٹی ایس کے سابق عہدیدار محبوب مجاور نے دعویٰ کیاہے کہ بم دھماکے کے دو اہم ملزمین رامچندر کلسنگارا، اور سندیپ ڈانگے کو اے ٹی ایس نے چھبیس ڈسمبر دوہزار آٹھ کو ماردیاتھا۔ بتایاگیاہے کہ اے ٹی ایس کے پولیس انسپکٹر محبوب مجاور کو اس سے پہلے معطل کیاگیاتھا اوراب ان کے اس بیان سے اس کیس نے ایک نیا موڑ لے لیاہے۔ بتایاگیاہے کہ مجاورنے شولا پور کی ایک عدالت میں اس سلسلے میں شواہد بھی پیش کئے ہیں۔ رامچندرکلسنگارا اور سندیپ ڈانگے آرایس ایس کے کارکن بتائے گئے تھے اورانہیں مالیگاؤں بم دھماکوں کے کیس میں مفرور بتایاگیاتھا۔ محبوب مجاور کا یہ بھی دعوی ہے کہ ان دونوں کی لاشوں کو چبھیس گیارہ ممبئی حملوں کے نامعلوم مہلوکین کی لاشوں کے ساتھ ٹھکانے لگایاگیاتھا۔ معلوم ہوا ہے کہ محبوب مجاور اے ٹی ایس کی اس ٹیم کا حصہ تھے جو مالیگاؤں بم دھماکوں کی تحقیقات کررہے تھے۔
دوسری طرف مالیگاؤں بم دھماکوں کی ملزمہ سادھوی پرگیہ کے وکیل جے پی مشرا نے محبوب مجاور کے دعوی کو کافی اہمیت کا حامل بتایاہے۔ میڈیا سے بات کرتے ہوئے مشرا نے کہا کہ اس دعوی کی جانچ ہونی چاہیے۔ این آئی اے جیسی ایجنسی اس معاملے کی تحقیقات کررہی ہے پھر بھی کلسنگارا اور ڈانگے کا پتہ نہ چلنا حیرت کی بات ہے۔ ان کاکہناتھا کہ محبوب مجاور کی بات میں کچھ دم ضرور لگتاہے۔ اوراس کی تحقیقات ہونی چاہیے۔
ادھر مالیگاوں بم دھماکوں کے ملزمین کے وکیل سنجیو پونالیکر نے محبوب مجاور کے دعوے کو بوگس قرار دیا ہے ۔ میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ سنجیو نے بتایا کہ دو ہزار چار میں محبوب مجاور معطل ہوچکے تھے اور دو ہزار نو میں ان پر چوری کا الزام لگایا گیا تھا۔ یہ شخص بارہ سال سے پولیس فورس کے باہر ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ مجاور کے دعوی کو ایک مذاق ہی سمجھا جانا چاہیے ۔ ان کا کہنا تھا کہ مجاور کو گرفتار کیا جانا چاہیے کیوں کہ وہ جھوٹ بول رہاہے۔
اترپردیش سماج وادی پارٹی میں سب کچھ ٹھیک نظر نہیں آرہا

اترپردیش سماج وادی پارٹی میں سب کچھ ٹھیک نظر نہیں آرہا



اترپردیش سماج وادی پارٹی میں سب کچھ ٹھیک نظر نہیں آرہا ہے۔ پارٹی عملاً دو گروپوں میں بٹ گئی ہے ۔ ملائم سنگھ یادو اور ان کے بیٹے اکھیلیش سنگھ یادو کے درمیان اب مصالحت کے امکانات بھی موہوم ہوتے جارہے ہیں ۔ دونوں گروپوں کی طرف سے پارٹی امیدواروں کے ناموں کا اعلان بھی کردیا گیا ہے۔ پارٹی کے ریاستی صدر شیوپال یادو کی طرف سے پارٹی کے انتخابی امیدواروں کی فہرست جاری کرنے کے بعد اکھیلیش سنگھ یادو کی طرف سے بھی ایک فہرست جاری کردی گئی ہے ۔ آج اکھیلیش سنگھ یادو کی قیامگاہ پر فہرست میں شامل کئی امیدوار جمع دیکھے گئے۔ اکھیلیش کے حامیوں کی طرف سے متضاد بیانات سامن آئے ہیں ۔ ایک حامی نے کہا کہ اکھیلیش سنگھ یادو نے نئی پارٹی کا اعلان کیا لیکن دوسروں کا کہنا تھا کہ نئی پارٹی کا اعلان نہیں کیا گیا ہے لیکن اکھیلیش سنگھ یادو نے کہا ہے کہ ان کے اعلان کردہ امیدوار ہی کامیابی حاصل کریں گے ۔ آنے والے دنوں میں سماج وادی پارٹی میں اور بھی گھمسان دیکھا جاسکتا ہے ۔
دوسری طرف ملائم سنگھ یادو کے حامی اور بااعتماد ساتھی بینی پرساد ورما نے کہا ہے کہ ملائم سنگھ یادو چٹان ہیں اور وہ کبھی جھکیں گے نہیں ۔ میڈیا سے بات کرتے ہوئے بینی پرساد ورما نے واضح کیا کہ جیت ملائم سنگھ یادو کی پارٹی کی ہوگی اور جو ملائم سنگھ یادو کے ساتھ رہے گا وہی انتخاب میں کامیابی حاصل کرے گا ۔

دوسری طرف اکھیلیش سنگھ یادو کے حامی رام گوپال یادو نے کہا ہے کہ پارٹی میں کوئی بحران نہیں ہے اس طرح کے حالات تمام پارٹیوں میں آتے رہے ہیں اور وہ حالات کا سامنا کرکے ابھرے ہیں اور سماج وادی پارٹی بھی اس سے باہر نکلے گی۔ رام گوپال یادو کا کہنا تھا کہ پارٹی سربراہ ملائم سنگھ یادو کو غلط مشورے دے کر بعض لوگ گمراہ کررہے ہیں ۔ ان کا کہنا تھا کہ یہ وقت گزرے گا اور سماج وادی پارٹی کیلئے مستقبل اچھا ہوگا۔ رام گوپال یادو کی طرف سے یہ اشارہ بھی دیا گیا ہے کہ اب مصالحت کے امکانات بھی ختم ہوچکے ہیں ۔
پونے : بیکری میں لگی آگ کی وجہ سے سات ملازمین زندہ جل کر فوت

پونے : بیکری میں لگی آگ کی وجہ سے سات ملازمین زندہ جل کر فوت



اُدھر مہاراشٹرا کے پونے میں بیکری میں لگی آگ کی وجہ سے سات ملازمین زندہ جل کر فوت ہوگئے۔ بتایاگیاہے کہ آج صبح چار بجے بیکری کے نچلے فلور میں اچانک آگ لگ گئی اور آگ نے بالائی حصے کواپنی لیپٹ میں لے لیا۔ اترپردیش سے تعلق رکھنے والے مزدورجو سورہے تھے زندہ جل کر فوت ہوگئے۔ مقامی واقع پر دلخراش مناظر دیکھے گئے۔ مہلوکین کی شناخت ارشاد انصاری، جنید انصاری، شانوانصاری، ذاکرانصاری، فہیم انصاری، اور ذیشان انصاری کی حثییت سے کی گئی ہے۔ مقامی پولیس نے اس سلسلے میں مقدمہ درج کرتے ہوئے تحقیقات شروع کردی ہیں۔
 ٹاملناڈو : اسٹیٹ بینک آف انڈیا کی عمارت میں آتشزدگی

ٹاملناڈو : اسٹیٹ بینک آف انڈیا کی عمارت میں آتشزدگی



ادھر ٹاملناڈو کے دارالحکومت چینائی میں اسٹیٹ بینک آف انڈیا کی عمارت میں آتشزدگی کا واقعہ پیش آیا۔ اطلاع ملنے پر فائر بریگیڈ کے عملہ نے مقام واقعہ پہونچ کر آگ پر قابو پایا۔ بتایا جارہا ہے کہ چار منزلہ عمارت کے آخری فلور پر شارٹ سرکٹ کی وجہ سے آگ لگ گئی تھی کسی بھی طرح کے جانی نقصان کی کوئی اطلاع نہیں ملی ہے ۔
کشمیر وادی میں علحدگی پسندوں کی اپیل پر آج ہڑتال

کشمیر وادی میں علحدگی پسندوں کی اپیل پر آج ہڑتال



کشمیر وادی میں علحدگی پسندوں کی اپیل پر آج ہڑتال ہے۔ علحدگی پسند تنظیموں نے جمعہ اور ہفتہ کو ہڑتال کا اعلان کیا ہے ۔ ہڑتال کی وجہ سے وادی کے کئی علاقوں میں بازار بند رہے ۔ سڑکیں بھی سنسان دکھائی دیں۔ جمعہ کے پیش نظر چوکسی اختیار کی گئی تھی ۔ واضح رہے کہ آٹھ جولائی کو برہان وانی کی سیکیورٹی فورسس کے ساتھ جھڑپ میں ہلاکت کے بعد وادی میں احتجاج پھوٹ پڑا تھا اور تقریباً سو افراد جاں بحق ہوئے تھے ۔ ہڑتال کی وجہ سے سیکیورٹی فورسس کو چوکس دیکھا گیا ۔
جھارکھنڈ: کوئلہ کی کان کے منہدم ہوجانے سے نو مزدور ہلاک

جھارکھنڈ: کوئلہ کی کان کے منہدم ہوجانے سے نو مزدور ہلاک



جھارکھنڈ کے گوڈا میں کوئلہ کی کان کے منہدم ہوجانے سے نو مزدور ہلاک ہوگئے ہیں جبکہ متعدد زخمی بتائے گئے ہیں۔ بتایاگیاہے کہ لال ماٹیا کان میں یہ واقعہ پیش آیا۔ جھارکھنڈ کے وزیراعلی رگھوبر داس حالات پر نظررکھے ہوئے ہیں۔ وزیراعظم نریندرمودی نے اس واقعہ پر وزیراعلی سے بات کی ہے۔ وزیراعظم نے اپنے ٹوئٹر پر اس واقعہ میں ہلاک ہونے والوں کے افرادخاندان سے اظہارتعزیت کیاہے۔ این ڈی آرایف کی ٹیمیں مقام واقعہ پہنچ گئی ہیں۔ کمپنی کی طرف سے مہلوکین کے ورثاء کو پانچ لاکھ روپئے ایکس گریشیا کا اعلان کیاگیاہے۔ اب بھی ملبے کے نیچے کئی مزدوروں کے پھنسے رہنے کا خدشہ ظاہرکیاگیا ہے جن کی تلاش جاری ہے۔ حکام نے ہلاکتوں میں اضافہ کا خدشہ ظاہرکیاہے۔
مالیگاوں بم دھماکہ کا نیا موڑ ۔

مالیگاوں بم دھماکہ کا نیا موڑ ۔



مالیگاؤں بم دھماکے کے کیس کا ایک نیا موڑ سامنے آیاہے۔ مہاراشٹرا اے ٹی ایس کے سابق عہدیدار محبوب مجاور نے دعویٰ کیاہے کہ بم دھماکے کے دو اہم ملزمین رامچندر کلسنگارا، اور سندیپ ڈانگے کو اے ٹی ایس نے چھبیس ڈسمبر دوہزار آٹھ کو ماردیاتھا۔ بتایاگیاہے کہ اے ٹی ایس کے پولیس انسپکٹر محبوب مجاور کو اس سے پہلے معطل کیاگیاتھا اوراب ان کے اس بیان سے اس کیس نے ایک نیا موڑ لے لیاہے۔ بتایاگیاہے کہ مجاورنے شولا پور کی ایک عدالت میں اس سلسلے میں شواہد بھی پیش کئے ہیں۔ رامچندرکلسنگارا اور سندیپ ڈانگے آرایس ایس کے کارکن بتائے گئے تھے اورانہیں مالیگاؤں بم دھماکوں کے کیس میں مفرور بتایاگیاتھا۔ محبوب مجاور کا یہ بھی دعوی ہے کہ ان دونوں کی لاشوں کو چبھیس گیارہ ممبئی حملوں کے نامعلوم مہلوکین کی لاشوں کے ساتھ ٹھکانے لگایاگیاتھا۔ معلوم ہوا ہے کہ محبوب مجاور اے ٹی ایس کی اس ٹیم کا حصہ تھے جو مالیگاؤں بم دھماکوں کی تحقیقات کررہے تھے۔
دوسری طرف مالیگاؤں بم دھماکوں کی ملزمہ سادھوی پرگیہ کے وکیل جے پی مشرا نے محبوب مجاور کے دعوی کو کافی اہمیت کا حامل بتایاہے۔ میڈیا سے بات کرتے ہوئے مشرا نے کہا کہ اس دعوی کی جانچ ہونی چاہیے۔ این آئی اے جیسی ایجنسی اس معاملے کی تحقیقات کررہی ہے پھر بھی کلسنگارا اور ڈانگے کا پتہ نہ چلنا حیرت کی بات ہے۔ ان کاکہناتھا کہ محبوب مجاور کی بات میں کچھ دم ضرور لگتاہے۔ اوراس کی تحقیقات ہونی چاہیے۔

ادھر مالیگاوں بم دھماکوں کے ملزمین کے وکیل سنجیو پونالیکر نے محبوب مجاور کے دعوے کو بوگس قرار دیا ہے ۔ میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ سنجیو نے بتایا کہ دو ہزار چار میں محبوب مجاور معطل ہوچکے تھے اور دو ہزار نو میں ان پر چوری کا الزام لگایا گیا تھا۔ یہ شخص بارہ سال سے پولیس فورس کے باہر ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ مجاور کے دعوی کو ایک مذاق ہی سمجھا جانا چاہیے ۔ ان کا کہنا تھا کہ مجاور کو گرفتار کیا جانا چاہیے کیوں کہ وہ جھوٹ بول رہاہے۔
پرانی نوٹیں جمع کرنے کے آخری دن بینک کی قطاروں میں ہجوم

پرانی نوٹیں جمع کرنے کے آخری دن بینک کی قطاروں میں ہجوم




بینکوں میں آج پرانے پانچسو اورہ زار روپیے کے نوٹ جمع کرانے کے آخری دن غیرمعمولی ہجوم دیکھا گیا۔ آٹھ نومبر کو وزیراعظم نریندر مودی کی طرف سے نوٹ بندی کے اعلان کے بعد سے عوام کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا ہے ۔ پچاس دن مکمل ہونے کے بعد عوام کا یہ کہنا ہے کہ اب بھی حالات نہیں سدھرے ہیں ۔ انہیں کافی مشکلات پیش آرہی ہیں۔ دیہی علاقوں میں کسانوں کو بھی حکومت کے اس فیصلے سے کافی تکالیف کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ دلی ‘ کولکتہ ‘ بنگلور ‘ ممبئی ‘ بھوپال ‘ لکھنو ‘ حیدرآباد اور دوسرے مقامات پر عوام آج بھی بینک کی قطاروں میں کھڑے دیکھے گئے ۔

Thursday, 29 December 2016

متھوٹ فینانس میں ہوئی ڈکیتی کی واردات میں ملوث ملزمین کی تلاش شدت سے جاری

متھوٹ فینانس میں ہوئی ڈکیتی کی واردات میں ملوث ملزمین کی تلاش شدت سے جاری



تلنگانہ کے ڈی جی پی انوراگ شرما نے کہا ہے کہ آرسی پورم میں متھوٹ فینانس میں ہوئی ڈکیتی کی واردات میں ملوث ملزمین کی تلاش شدت سے جاری ہے۔ محکمہ پولیس کی سالانہ کارکردگی سے متعلق تفصیلات بتاتے ہوئے ڈی جی پی نے بتایاکہ ملزمین کی تلاش کے لئے سات کمیٹیاں تشکیل دی گئی ہیں ۔ اوراس سلسلے میں پولیس کی تحقیقات کا دائرہ پڑوسی ریاستوں تک پھیلایاگیاہے۔ انوراگ شرما نے بتایاکہ ملزمین کے خاکے بھی جاری کردیئے گئے ہیں۔ اور جلد یہ دیر میں انہیں کسی بھی طرح سے گرفتارکیاجائے گا۔ محکمہ پولیس کی اس سال کی کارکردگی کے بارے میں بی جے پی نے بتایا کہ کمیونٹی سی سی ٹی وی کے ذریعہ دو ہزار دس کیسس کو حل کیا گیا ہے ۔ ڈی جی پی نے بتایاکہ سائبرکرائم اور خواتین کے خلاف جرائم میں کمی آئی ہے۔ ریاست میں دو سو اکیس شی ٹیمیں کام کررہی ہیں۔ تین سو اکہتر کیسس میں ملوث دو ہزار سات سو تینتیس افراد کی کونسلنگ کی گئی ہے ۔ ڈی جی پی نے بتایاکہ پولیس محکمہ میں تقررات کے معاملہ میں خواتین کو تینتیس فیصد تحفظات فراہم کئے جارہے ہیں ۔ ڈی جی پی نے بتایاکہ ہوم گارڈس کے مسائل کو حل کیا جائے گا ۔ خدمات کی انجام دہی کے دوران مرنے والے ہوم گارڈس کے ورثا کو بیس لاکھ روپیے دیئے جائیں گے۔
گرفتارکرکے رات بھر سردی میں رکھا گیا : کودنڈا رام

گرفتارکرکے رات بھر سردی میں رکھا گیا : کودنڈا رام



تلنگانہ جے اے سی کے صدرنشین کودنڈا رام نے کہا کہ دھرنے کی مسنوخی کے اعلان کے بعد بھی پولیس نے انہیں گرفتارکیا ہے ۔ انہیں گرفتارکرکے رات بھر سردی میں رکھا گیا ۔ انہوں نے کہا کہ حصول اراضی سے متاثر افراد کے حق میں یہ دھرنا کیا جارہا ہے لیکن پولیس نے اسے ناکام بنادیا ۔ انہوں نے کہا کہ وہ تارناکہ میں اپنی قیامگاہ پر خاموش احتجاج کررہے ہیں ۔ اس سے پہلے انہوں نے بتایا کہ کل ضلعی مراکز پر احتجاجی مظاہرے کئے جائیں گے۔ انہوں نے حکومت سے ایک بارپھر مطالبہ کیا کہ زبردست اراضی کا حصول بند کیا جائے ۔
زبردستی اراضی حصول کے خلاف حکومت کو انتباہ

زبردستی اراضی حصول کے خلاف حکومت کو انتباہ



حصول اراضی بل کے خلاف حکومت کے موقف پر اپنی قیامگاہ پر احتجاج کرنے والے جے اے سی کے صدرنشین کودنڈارام سے کانگریسی قائدین نے ملاقات کرتے ہوئے اظہار یگانگت کیا ۔ اس موقع پر کودنڈارام نے کہا کہ حکومت کی طرف سے انہیں احتجاج کی اجازت نہیں دی گئی اس لئے انہوں نے اپنی قیامگاہ پر احتجاج کیا ہے ۔ اس موقع پر میڈیا سے بات کرتے ہوئے صدر تلنگانہ کانگریس اتم کمار ریڈی نے پراجکٹ کے نام پر زبردستی اراضی حصول کے خلاف حکومت کو انتباہ دیا ہے ۔ انہوں نے جے اے سی کو اندرا پارک پر دھرنا کی اجازت نہ دینے پر بھی حکومت کو تنقید کا نشانہ بنایا ۔ انہو ں نے الزام لگایا کہ اراضی حصول کے معاملہ میں حکومت نے قواعد کی خلاف ورزی کی ہے ۔ اسمبلی کے اپوزیشن لیڈر جانا ریڈی نے اس موقع پر کہا کہ تلنگانہ حکومت مخالف جمہوریت رویہ کو اختیار کئے ہوئے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ تلنگانہ تحریک میں عدم رول ادا کرنے والے کودنڈارام کے ساتھ اس طرح کا سلوک مناسب نہیں ہے ۔ انہو ں نے کہا کہ اگر کودنڈارام کے ساتھ اس طرح کا سلوک کیا جاتاہے تو ایک آدمی کے ساتھ کیا ہوگیا ۔ اس موقع پر تلنگانہ کانگریس کے دوسرے قائدین بھی موجود تھے ۔
متنگی مسجد کیس : مجلس بیرسٹر اسد الدین اویسی اور مجلسی قائدین باعزت بری

متنگی مسجد کیس : مجلس بیرسٹر اسد الدین اویسی اور مجلسی قائدین باعزت بری



سنگاریڈی کے قریب سڑک کی توسیع کے نام پر مسجد متنگی کو شہید کرنے کے دوران احتجاج کے سلسلہ میں درج کردہ مقدمات میں ضلع میدک سنگاریڈی کی عدالت نے آج صدر مجلس بیرسٹر اسد الدین اویسی اور مجلسی قائدین باعزت بری قرار دیا ۔ سال دو ہزار پانچ میں پٹن چیرو منڈل کے متنگی میں یہ واقعہ پیش آیا تھا ۔ مسجد کی شہادت کی اطلاع پاکر صدر مجلس اور مجلس کے دیگر قائدین نے وہاں پہونچ کر احتجاج کیا تھا اور مسجد کی شہادت کو رکوادیا تھا جس پر مجلس کے قائدین پر سنگین الزامات کے تحت مقدمہ درج کیا گیا تھا تاہم آج عدالت نے مجلسی قائدین کو باعزت بری قرار دیا ۔ عدالت کے فیصلہ کے بعد بیرسٹر اویسی نے اپنے ٹوئٹر پر اس وقت کی کانگریس حکومت کو تنقید کا نشانہ بنایا ۔ بیرسٹر اویسی نے سوال کیا کہ کیا کانگریس پارٹی مسجد کی انہدامی کارروائی کے سلسلہ میں قواعد کی خلاف ورزی اور مجلسی قائدین پر جھوٹا مقدمہ درج کرنے پر معافی مانگے گی ۔ اس واقعہ کے سلسلہ میں محکمہ مال کی طرف سے مجلس کے صدر بیرسٹر اسد الدین اویسی ‘ فلور لیڈر اکبر الدین اویسی ‘ اور دوسرے قائدین کے خلاف پولیس میں شکایت درج کرائی گئی تھی جس پر مقدمہ درج کیا گیا تھا ۔ اس واقعہ کے وقت صدر مجلس اور اس وقت میدک کے مقامی کلکٹر اے کے سنگھل کے درمیان مسجد کے انہدام معاملہ کو لے کر بحث و تکرار بھی ہوئی تھی ۔
شمالی ہند : شدید سردی کے ساتھ کہر اب بھی برقرار

شمالی ہند : شدید سردی کے ساتھ کہر اب بھی برقرار



شمالی ہند کے بیشتر علاقوں میں شدید سردی کے ساتھ کہر اب بھی برقرار ہے ۔ دہلی مراد آباد اور ہلدوانی میں کہر کی وجہ سے عام زندگی صبح کے اوقات میں مفلو ج دیکھی گئی ۔ کہر کے باعث دہلی ایرپورٹ سے پروازوں کی روانگی میں بھی تاخیر ہوئی ہے ۔
جموں و کشمیر : سکیوریٹی فورسس اور عسکریت پسندوں کے درمیان انکاونٹر

جموں و کشمیر : سکیوریٹی فورسس اور عسکریت پسندوں کے درمیان انکاونٹر



جموں و کشمیر کے باندی پورہ میں سکیوریٹی فورسس اور عسکریت پسندوں کے درمیان انکاونٹر ہوا ہے ۔ بتایا گیا ہے کہ باندی پورہ کے شاہ گند حاجن علاقہ میں عسکریت پسند چھپے ہوئے ہیں ۔ پولیس اورسکیوریٹی فورسس نے اطلاع ملنے پر علاقہ کی ناکہ بندی کردی ہے اور فائرنگ کا تبادلہ بھی جاری ہے ۔ ابھی تک ہلاکتوں کے بارے میں کوئی اطلاع سامنے نہیں آئی ہے ۔
راجا فقیر تو پراجا بھی فقیر

راجا فقیر تو پراجا بھی فقیر



راجا فقیر تو پراجا بھی فقیر ۔ وزیر اعظم کی تقریر میں خود کو فقیر کہنے کے ریمارک پر نوٹ بندی سے پریشان مہاراشٹرا کے کسان نے یہ بات کہی ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ پچاس دنوں میں حالات اور بگڑ گئے ہیں اور وہ کاشت بھی نہیں کرپارہے ہیں۔ حکومت نے غریب کسانوں کا خیال نہیں رکھا جس کی وجہ سے کسان کافی پریشان ہیں۔
 نوٹ بندی کے پچاس دن مکمل ۔ عوام کی مشکلات برقرار

نوٹ بندی کے پچاس دن مکمل ۔ عوام کی مشکلات برقرار


نوٹ بندی کے پچاس دن مکمل ہوچکے ہیں لیکن عوام کی مشکلیں اب بھی برقرار ہے ۔ ملک بھر کے اے ٹی ایمس کے پاس میڈیا سے بات کرتے ہوئے عوام نے بتایا کہ ابھی تک حالات میں کوئی بہتری نہیں آئی ہے ۔ اے ٹی ایمس اب بھی کام نہیں کررہے ہیں۔ عوام کا کہنا تھا کہ آر بی آئی کی طرف سے موثر انتظامات نہیں کئے گئے اور نہ ہی حکومت نے عوام کو سہولت پہونچانے کی کوشش کی ۔
نوٹ بندی کے فیصلے کا غیرمعمولی اثر : ارون جیٹلی

نوٹ بندی کے فیصلے کا غیرمعمولی اثر : ارون جیٹلی



مرکزی وزیر فینانس ارون جیٹلی نے بتایا ہے کہ نوٹ بندی کے فیصلے کا غیرمعمولی اثر ہوا ہے اور پچاس دنوں کے بعد اس کے اثرات بھی دکھائی دینے لگے ہیں ۔ میڈیا سے بات کرتے ہوئے ارون جیٹلی نے بتایا کہ بیشتر پرانی نوٹیں جمع ہوچکی ہیں ۔جیٹلی نے کہا کہ ٹیکس کی ادائیگی میں بھی اضافہ ہوا ہے۔ انہوں نے یہ بھی بتایا کہ بڑی تعداد میں پرانی نوٹوں کو تبدیل کیا گیاہے۔ ان کا کہنا تھا کہ حکومت کے اس فیصلے کے بعد کوئی ناخوشگوار واقعہ پیش نہیں آیا لیکن واضح رہے کہ بینکوں کی قطاروں میں نوے سے زائد افراد مارے جاچکے ہیں۔ ارون جیٹلی نے بتایا ہے کہ ربیع کی فصلوں میں چھ عشاریہ دو صفر کا اضافہ ہوا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ بینکوں میں مزید نئے نوٹوں کی دستیابی کو یقینی بنایا جائے گا۔ وزیر فینانس نے بتایا کہ انیس دسمبر تک چودہ عشاریہ چار فیصد ٹیکس آیا اور بالراست ٹیکسس میں بھی واضح اضافہ ہواہے ۔ لائف انشورنس کاروبار میں اضافہ ہوا ہے ۔ پٹرولیم کے استعمال میں بھی اضافہ ہوا ہے ۔
 ہفتہ کو وزیراعظم مودی قوم سے کریں گے خطاب ۔ قیاس آرائیوں کا بازار گرم

ہفتہ کو وزیراعظم مودی قوم سے کریں گے خطاب ۔ قیاس آرائیوں کا بازار گرم



نوٹ بندی سے متعلق آٹھ نومبر کو کئے گئے اعلان کے بعد اب وزیراعظم اپنے فیصلے کے پچاس دن مکمل ہونے پر نئے سال سے قبل عوام سے ایک بارپھر خطاب کرنے والے ہیں۔ بتایاجارہاہے کہ ہفتے کی رات وزیراعظم ٹی وی پر قوم سے خطاب کریں گے۔ اس خطاب کو لیکر ابھی تک کوئی واضح اشارہ نہیں مل پایاہے تاہم کہا جارہاہے کہ وزیراعظم مودی اپنے فیصلے کے بارے میں ہی قوم سے خطاب کرنے والے ہیں۔ وزیراعظم نے اعلان کیاتھا کہ انہیں پچاس دن کا وقت دیاجائے اب دیکھنا یہ ہے کہ اپنے سال کے آخری خطاب میں وزیراعظم کس طرح کا اعلان کریں گے وزیراعظم کے خطاب کو لیکر اب کافی تجسس دیکھاجارہے۔ مختلف قسم کی قیاس آرائیاں بھی کی جارہی ہیں۔ پتہ چلا ہے کہ ہفتے کی شام ساڑھے سات بجے وزیراعظم قوم سے خطاب کریں گے۔

Wednesday, 28 December 2016

Tuesday, 27 December 2016

پرانے نوٹوں کو جمع کرانے کی آخری تاریخ کیلئے صرف تین دن رہ گئے

پرانے نوٹوں کو جمع کرانے کی آخری تاریخ کیلئے صرف تین دن رہ گئے



نوٹ بندی کے بعد پرانے نوٹوں کو جمع کرانے کی آخری تاریخ کیلئے صرف تین دن رہ گئے ہیں لیکن عوام کی پریشانیاں برقرار ہیں۔ عوام کی مشکلات کو پچاس دن میں دورکرنے کا وعدہ کیا گیا تھا لیکن انچاس دن گزرجانے کے باوجود یہ مشکلات ختم ہوتی دکھائی نہیں دے رہی ہیں۔ آج بھی عوام بینکوں اور اے ٹی ایمس کی طویل قطاروں میں ٹھہرنے کی زحمت اٹھانے پر مجبور ہیں۔ کئی بینکوں میں قطاروں میں نظم و ضبط بھی نہیں ہے۔ ڈپازٹس اور وتھ ڈرائلس کیلئے علحدہ علحدہ قطار تک نہیں ہے۔ اسٹیٹ بینک آف انڈیا علی آباد برانچ میں بنک کے اصل دروازے کو بندکردیا گیا ہے اور پیچھے کے دروازے سے اکاونٹ ہولڈرس کو اندر چھوڑا جارہا ہے ۔ چھوٹی سی جگہ اور عوام کا ہجوم اور اس پر دروازہ بھی بند۔ قطار میں کھڑے ہوئے اکاونٹ ہولڈرس ستم بالائے ستم کی صورتحال سے گزررہے ہیں۔ ایس آر نگر‘ امیر پیٹ‘ صنعت نگر ‘ بالا نگر‘ قطب اللہ پور‘ کوکٹ پلی اور بیگم پیٹ جیسے کئی علاقو ں میں موجود اے ٹی ایمس رقم نہ ہونے سے بند پڑے ہیں۔ نہ نقدی ہی جاری کی جارہی ہے اور نہ نقدی سے پاک لین دین کو یقینی بنانے کیلئے کوئی ٹھوس قدم اٹھایا گیا ہے ۔ حکومت اور ارباب مجاز کی اس غفلت اور لاپرواہی کو دیکھنے سے ایسا محسوس ہوتا ہے کہ عوام کی مشکلات جلد ختم ہونے والی نہیں ہیں۔ معلوم نہیں کہ عام آدمی اس کرب سے کب تک دوچار ہوتا رہے گا ۔
گوا :طیارہ رن وے سے پھسل گیا

گوا :طیارہ رن وے سے پھسل گیا



گوا کے ڈابولی ایرپورٹ پر جٹ ایرویز کا ایک طیارہ رن وے سے پھسل گیا ۔ اس واقعہ میں بعض مسافرین بھی زخمی ہوگئے۔ بتایا گیا ہے کہ ممبئی پرواز کرنے کیلئے جٹ ایرویز کا طیارہ اڑان بھرنے والا تھا تاہم رن وے پر طیارہ پھسل گیا۔ بارہ مسافرین معمولی طور پر زخمی ہوئے ہیں۔ اس واقعہ کے بعد ایرپورٹ کو بند کردیا گیا ۔ تمام مسافرین کو طیارہ سے نیچے اتار دیا گیا ہے ۔بتایا گیا ہے کہ آج صبح پانچ بجے یہ واقعہ پیش آیا تھا ۔ یہ فلائٹ دبئی سے گوا پہونچی تھی جو ممبئی روانہ ہونے والی تھی ۔ طیارہ میں سات رکنی عملہ بھی سوار تھا ۔ واقعہ کے وقت مسافرین کو کافی افراتفری کے حال میں دیکھا گیا ۔
جعفر حسین معراج نے آپریشن کے دوران 8 افراد کی بصارت سے محرومی کا مسئلہ اسمبلی میں اٹھایا

جعفر حسین معراج نے آپریشن کے دوران 8 افراد کی بصارت سے محرومی کا مسئلہ اسمبلی میں اٹھایا



مجلس کے رکن اسمبلی جعفر حسین معراج نے سروجنی دیوی آئی ہاسپٹل میں آپریشن کے دوران 8 افراد کی بصارت سے محرومی کا مسئلہ اسمبلی میں اٹھایا ۔ انہوں نے وقفہ سوالات کے دوران کہا کہ اس معاملہ کی مکمل جانچ کی جانی چاہئے ۔ کیونکہ لاپرواہی سے آپریشن پر غریبوں کی آنکھ متاثر ہوئی ہے۔ ڈاکٹروں کی پوری ٹیم کی لاپرواہی کے سبب ایسا ہوا ہے ۔ اس معاملہ پر آنکھ نہیں پھیرنی چاہئے بلکہ تفصیلی جانچ کی جائے ۔ انہوں نے کہا کہ آپریشن تھیٹر کی بھی مناسب دیکھ بھال نہیں ہورہی ہے اس میں بھی بیکٹیریا پھیل رہا ہے ۔ اس اسپتال کے ڈاکٹرس آپریشن کیلئے مریضوں کو اپنے خانگی ہاسپٹل آنے کا مشورہ دے رہے ہیں۔
مکانات کی تعمیر  میں  مسلمانوں کو نظرانداز کرنے پر اکبراویسی نے برہمی کااظہارکیا

مکانات کی تعمیر میں مسلمانوں کو نظرانداز کرنے پر اکبراویسی نے برہمی کااظہارکیا



غریبوں کے لئے مکانات کی تعمیر کے سلسلے میں اقلیتوں بالخصوص مسلمانوں کو نظرانداز کرنے پر اکبراویسی نے برہمی کااظہارکیاہے۔ اسمبلی میں اکبراویسی نے انیس سواسی سے دوہزارسولہ تک کے اعداد وشمار پیش کئے۔ اکبراویسی نے بتایاکہ سال انیس سو تریاسی سے دوہزار چودہ تک حیدرآبادمیں صرف پنتیس ہزار ایک سو چھیاسٹھ مکانات غریبوں کے لئے تعمیر کئے گئے۔ اکبراویسی نے بتایاکہ اقلیتوں کے لئے دوہزار سات سے دوہزار سولہ تک مکانات کی تعمیر کا تناسب ایک اعشاریہ پانچ فیصدرہا۔ مجلس کے فلورلیڈر نے کہا کہ سابق میں مکانات کی تعمیر میں بے قاعدگیوں اور دھاندلیوں کے ذمہ داروں کے خلاف وقت کے تعین کے ساتھ تحقیقات کرتے ہوئے انہیں جیل بھیجنا چاہیے۔ قائد مجلس نے کہا کہ غریب عوام نے تلنگانہ حکومت سے چھت فراہم کرنے کی توقع ہے حکومت کو ان کی توقع کو پورا کرنا ہوگا۔ مجلس کے فلور لیڈر نے حکومت کو مشورہ دیا کہ ڈبل بیڈروم مکانات کی تعمیر میں ہوئی بدعنوانیوں کا سنجیدہ نوٹ لیناچاہیے اور ذمہ داروں کو بخشا نہیں جاناچاہیے۔
 وقف جائیدادوں کے تحفظ کیلئے مجلس ہمیشہ سے آواز اٹھاتی آرہی ہے

وقف جائیدادوں کے تحفظ کیلئے مجلس ہمیشہ سے آواز اٹھاتی آرہی ہے



مجلس کے فلور لیڈر اکبر الدین اویسی نے درگاہ حضرت حسین شاہ ولی کی 700 ایکر اراضی کو وقف بورڈ کے حوالہ کرنے کے سلسلہ میں ہاوز کمیٹی تشکیل دینے کا مطالبہ کیا ہے ۔ اسمبلی میں آج اکبر اویسی نے کہا کہ وقف جائیدادوں کے تحفظ کیلئے مجلس ہمیشہ سے آواز اٹھاتی آرہی ہیں تاکہ اوقافی جائیدادوں کا تحفظ ہوسکے ۔ اکبر اویسی نے بتایا کہ درگاہ حسین شاہ ولی کی ایک ہزار چھ سو ایکر اراضی کی بھی نشاندہی مجلس کی طرف سے ہی کی گئی تھی ۔ اب بھی درگاہ حسین شاہ ولی کی 700 ایکر اراضی کسی کو الاٹ نہیں کی گئی ہے ۔ اس لئے حکومت کو ہاوز کمیٹی تشکیل دی جانی چاہئے تاکہ اس اراضی کو وقف بورڈ کے حوالہ کیا جاسکے اور اس کا مسلمانوں کی فلاح و بہبود کیلئے استعمال عمل میں لایا جاسکے ۔ اکبر اویسی کے اس مطالبہ پر وزیر فینانس ای راجندر نے کہا کہ اس مطالبہ کو نوٹ کیا گیا ہے اور اس پر غور کیا جائے گا ۔
ریاست میں صدفیصد ڈبل بیڈروم مکانات کی تعمیر کو یقینی بنایاجائے گا

ریاست میں صدفیصد ڈبل بیڈروم مکانات کی تعمیر کو یقینی بنایاجائے گا



تلنگانہ کے وزیراعلی کے چندرشیکھرراؤ نے آج ایوان اسمبلی میں بتایاکہ ریاست میں سو فیصد ڈبل بیڈروم مکانات کی تعمیر کو یقنی بنایاجائے گا۔ اپنے خطاب میں وزیراعلی نے کہا کہ ڈبل بیڈروم مکانات کی تعمیر کو ختم کرنے کا کوئی سوال ہی پیدا نہیں ہوتا۔ انہوں نے بتایا کہ ان مکانات کی تعمیر کے لئے مرکزی حکومت بھی فنڈس فراہمی کے لئے تیارہے۔ ملک میں دوسری ریاست میں کہیں نہ ہواس طرح کے مکانات کی تعمیر عمل میں لائی جائے گی۔ ان تعمیرات کے دوران بدعنوانیوں میں ملوث افراد کے خلاف بھی کاروائی کی جائے گی۔
بی جے پی انتقامی مقصد سے مہم چلارہی ہے۔ مایاوتی

بی جے پی انتقامی مقصد سے مہم چلارہی ہے۔ مایاوتی



بی ایس پی کی سربراہ مایاوتی نے ان کی پارٹی کے اکاونٹ میں جمع رقم کو جائز قرار دیا ہے ۔ میڈیا سے بات کرتے ہوئے مایاوتی نے الزام لگایا ہے کہ بی جے پی انتقامی کارروائی کے تحت اس طرح کی حرکتیں کررہی ہیں۔ مایاوتی نے بتایا ہے کہ ان کی پارٹی ہمیشہ سے قواعد کی پابندی کرتے ہوئے رقم جمع کراتی آئی ہے ۔ مایاوتی نے بتایا کہ اکتیس اگست تک وہ اترپردیش میں تھی اور چندوں کے ذریعہ جو رقم موصول ہوئی تھی وہ نوٹ بندی سے پہلے جمع کی گئی تھی ۔ مایاوتی نے یہ بھی کہا کہ بی جے پی جو مخالفت دلت ذہن رکھتی ہے وہ نہیں چاہتی کہ وہ وزیر اعلی بنیں اس لئے اس طرح کی حرکتیں کی جارہی ہیں۔
مرکزی وزیر اور بی جے پی کے سینئر لیڈر روی شنکر پرساد نے مایاوتی کی جانب سے وزیراعظم اور امیت شاہ پر کی گئی تنقیدوں کی مذمت کی۔ میڈیا سے بات کرتے ہوئے روی شنکرپرساد نے کہا کہ مایاوتی نوٹ بندی کی جس طرح سے کھل کر رہی تھیں اس سے بات واضح ہوگئی ہے کہ کچھ نہ کچھ بات ضرور تھی۔ روی شنکر پرساد نے کہا کہ مایاوتی کی مخالفت نوٹ بندی کو لیکر کیوں کی جارہی تھی اس کی وجہ اب معلوم ہوچکی ہے۔
دوسری طرف بی ایس پی سے بی جے پی میں شامل ہوئے سوامی پرسادموریا نے کہا ہے کہ مایاوتی اپنے کارکنوں سے بدعنوانیوں کی دیوی بنی ہوئی ہیں۔ میڈیا سے بات کرتے ہوئے سوامی پرساد موریا نے کہا کہ بدعنوانیوں کی دیوی جمہوریت کو نیلا م کرتی رہی ہیں۔ مایاوتی نے کانشی رام کے خوابوں کو چکناچورکیاہے۔ انہوں نے اربوں کروڑوں روپئے کی کمائی کی ہے۔

اس سے پہلے انفورسمنٹ ڈائرکٹوریٹ نے بی ایس پی کے اکاونٹ میں 104 کروڑ روپئے کی رقم کا پتہ چلایا تھا جبکہ پارٹی سربراہ مایاوتی کے بھائی آنند کے یونین بینک آف انڈیا کے اکاونٹ میں ایک کروڑ ترتالیس لاکھ روپئے کی رقم بھی پائی گئی ۔ یہ کہا جارہا ہے کہ نوٹ بندی کے بعد یہ رقم جمع کرائی گئی تھی ۔ انفورسمنٹ ڈائرکٹوریٹ کی طرف سے اس سلسلہ میں تحقیقات کی جارہی ہے ۔
وزیر اعظم کو خود یہ طے کرنا ہوگا کہ انہیں کس چوراہے پر عوام سزا دیں

وزیر اعظم کو خود یہ طے کرنا ہوگا کہ انہیں کس چوراہے پر عوام سزا دیں




آر جے ڈی کے سربراہ لالو پرساد یادو نے کہا ہے کہ وزیر اعظم کو خود یہ طے کرنا ہوگا کہ انہیں کس چوراہے پر عوام سزا دیں ۔ میڈیا سے بات کرتے ہوئے لالو یادو نے کہا کہ وزیر اعظم نے خود کہا تھا کہ انہیں پچاس دن کا موقع دیا جائے لیکن عوام کے ساتھ دھوکہ کیا گیا ہے ۔ وزیر اعظم پر کوئی بھروسہ نہیں کرتا ۔ جلسوں میں دس آدمیوں کو سامنے کھڑے کر کے مودی مودی کہلانے سے ملک کا کام نہیں چلے گا ۔
میری چوکیداری سے کچھ لوگ کافی پریشان ہیں

میری چوکیداری سے کچھ لوگ کافی پریشان ہیں



وزیر اعظم نریندر مودی نے کہا ہے کہ ملک کو کالے دھن اور کالے من دونوں نے برباد کیا ہے ۔ اترکھنڈ میں ریالی سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم مودی نے کہا کہ ملک سے کالا دھن اور کالا من دونوں جاناچاہئے ۔ نوٹ بندی کے فیصلہ پر کی جارہی تنقیدوں پر تبصرہ کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ وہ چوکیداری کررہے ہیں کچھ لوگ پریشان ہیں۔ انہیں تکلیف ہورہی ہے کہ ایسا کیسا چوکیدار آگیا جو چوروں کے سرداروں پر وار کررہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ وہ بدعنوانیوں کے خلاف لڑائی چھیڑ دی ہے ۔ مودی نے کہا کہ ایک ہزار اور پانچ سو روپئے کے نوٹ بند کرکے ہم نے اچھے اچھوں کے الماریاں کھول دی ہیں۔ لیکن بے ایمانوں کی عادت جاتی نہیں ‘ ان کے خون میں ہی بے ایمانی ہے ۔ پچھلے راستے سے نوٹ بدلے جارہے ہیں لیکن ہم ان بے ایمانوں پر بھی نظر رکھے ہوئے ۔

Monday, 26 December 2016

Sunday, 25 December 2016

Saturday, 24 December 2016

اترپردیش : حکومت کی ناکامی کے خلاف علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے طلبہ کی طرف سے احتجاج

اترپردیش : حکومت کی ناکامی کے خلاف علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے طلبہ کی طرف سے احتجاج



اترپردیش میں مسلمانوں کو تحفظات دینے کے وعدہ میں اکھلیش سنگھ یادو حکومت کی ناکامی کے خلاف علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے طلبہ کی طرف سے احتجاج کیا گیا ۔ طلبہ کی کثیر تعداد نے ریالی نکالتے ہوئے یادو حکومت کے خلاف نعرے بازی کی اور کہا کہ مسلمانوں کو 18 فیصد تحفظات کا جو وعدہ کیا گیا تھا اسے عملی جامہ پہنانا چاہئے ۔ احتجاجی نوجوان اپنے ہاتھوں میں پلے کارڈس تھامے ہوئے تھے جس پر تحریر تھا کہ سماج وادی پارٹی کے دو ہزار بارہ کے منشور میں کئے گئے وعدے کو پورا کیا جائے ۔ تحفظات ‘ مسلمانوں کا حق ہے ۔
وزیر اعظم مودی کی مقبولیت کانگریسی قائدین کو ہضم نہیں ہورہی

وزیر اعظم مودی کی مقبولیت کانگریسی قائدین کو ہضم نہیں ہورہی



بی جے پی کے سینئر لیڈر سریکانت شرما نے کہا ہے کہ وزیر اعظم مودی کی مقبولیت کانگریسی قائدین کو ہضم نہیں ہورہی ہے ۔ میڈیا سے بات کرتے ہوئے سریکانت شرما نے کہاکہ ملک میں کسانوں کی ابتر حالت کیلئے کانگریس حکومت ذمہ دار تھی ۔ کانگریس نے کبھی کسانوں اور غریبوں کی حالات کی فکر نہیں کی بلکہ صرف اپنے مفاد کیلئے کام کیا ۔
ٹیلر کے اکاونٹ میں اٹھیاسی لاکھ روپئے کی رقم منتقل

ٹیلر کے اکاونٹ میں اٹھیاسی لاکھ روپئے کی رقم منتقل


 بہار کے مظفر پورمیں ایک ٹیلر کے اکاونٹ میں اٹھیاسی لاکھ روپئے کی رقم منتقل ہونے پر بینک حکام حیرت زدہ رہ گئے۔ بتایاگیا کہ محمد احمد گاؤں میں ایک چھوٹی سی دوکان چلاتے اور سنٹر ل بینک آف انڈیا کے مقامی شاخ میں ان کااکاونٹ ہے جہاں چار دن قبل ان کے اکاونٹ میں اچانک اٹھیاسی لاکھ روپئے کی رقم کولکتہ سے جمع کرائی گئی ۔محمد احمد جب اپنے اکاونٹ سے ایک ہزارروپئے نکالنے پہنچے توانہیں پتہ چلا کہ ان کے اکاونٹ میں اٹھیاسی لاکھ روپئے جمع ہیں۔ بینک میں جب جانچ کی تومعلوم ہوا کہ کولکتہ سے اس اکاونٹ میں رقم ٹرانفسر کی گئی ہے۔ اس کام کے لئے احمد کا آدھار کارڈ بھی استعمال ہواہے۔ بینک انتظامیہ فی الحال کچھ بھی کہنے سے گریز کررہاہے۔ جبکہ احمد اوراس کا خاندان گاؤں چھوڑ کرجاچکا ہے۔
نوٹ بندی کے بعد نٹ بنکنگ میں دھاندلیاں عروج پر

نوٹ بندی کے بعد نٹ بنکنگ میں دھاندلیاں عروج پر



اترپردیش کے شہر کانپور میں ایک شخص اپنے اکاونٹ سے رقم نکالنے کے لئے رقم پہنچا تواسے یہ معلوم ہوا کہ اس کے اکاونٹ میں پیسہ ہی نہیں ہے جبکہ کھاتہ دار اجیت راٹھور کا کہناتھا کہ اس کے اکاونٹ میں تیس ہزارروپئے کی رقم موجود تھی۔ جب بینک نے اجیت کے اکاونٹ کی جانچ کی تو پتہ چلا کہ اس کے اکاونٹ سے اٹھائیس ہزارروپئے کی رقم پے ٹیم کو منتقل کئے گئے ہیں لیکن اجیت کا کہناہے کہ وہ پے ٹیم کے بارے میں جانتا ہی نہیں ہے اوراس کا استعمال نہیں کیاہے۔ پولیس میں شکایت درج کرادی گئی ہے اوراس سلسلے میں تحقیقات کی جارہی ہیں۔
متھرا:نوٹ کے اثر سے تجارت بُری طرح متاثر

متھرا:نوٹ کے اثر سے تجارت بُری طرح متاثر


اترپردیش کا شہر متھرا جو ساڑیوں کی تیاری کا ایک بڑا مارکٹ سمجھا جاتا ہے ان دنوں نوٹ بندی کی وجہ سے مسائل کا شکار ہیں ۔ ساڑیوں کی تیاری کے شعبہ سے ہزار افراد وابستہ ہیں اور ان کی تیار کردہ ساڑیاں دیہی علاقوں میں فروخت کی جاتی ہیں۔ لیکن جب سے نوٹ بندی ہوئی ہیں ‘ دیہی علاقوں میں عوام کے پاس رقم نہیں ہے جس کی وجہ سے جتنی ساڑیاں انہوں نے تیار کی تھی اب وہ فروخت نہیں ہوپا رہی ہیں۔ متاثرہ ملازمین نے بتایا کہ عوام کے پاس روزمرہ کی اشیا کی خریداری کیلئے بھی رقم نہیں ہے تو پھر ساڑیوں کیلئے کون رقم خرچ کرے گا جو ساڑیاں تیار ہیں اسے بھی خریدنے والا کوئی نہیں ہے جس کی وجہ سے ان کا بھی جینا مشکل ہوگیا ہے ۔
گجرات : شادی کی تقریب کے دوران مقامی گلوکار پر نوٹوں کی بارش

گجرات : شادی کی تقریب کے دوران مقامی گلوکار پر نوٹوں کی بارش



عوام ایک طرف جہاں نوٹوں کے حصول کیلئے بینک اور اے ٹی کی قطاروں میں کھپارہے ہیں وہیں بعض مقامات پر پیسہ پانی کی طرح بہایا جارہا ہے ۔ گجرات کے نوساری علاقہ میں ایک شادی کی تقریب کے دوران مقامی گلوکار پر نوٹوں کی بارش کی گئی ۔ ایک مرتبہ نہیں دو مرتبہ نہیں بلکہ چھوٹی اور بڑی نوٹیں بار بار کسی گلوکار کے اوپر نچھاور کی گئی ۔ کچھ ہی دیر میں جس اسٹیج پر گلوکار مظاہرہ کررہا تھا اس کے چاروں طرف نوٹوں کی چادر ہی بچ گئی ۔ زیادہ تر دس اور سو کے نوٹ نچھاور کئے گئے ۔ واضح رہے کہ اس سے پہلے بھی گجرات میں مذہبی پروگرام کے دوران ایسی ہی رقم لٹائی گئی تھی ۔